نیا ڈی پی سی ایم: مختلف خطوں کے لیے پابندیاں

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin
Share on telegram
پیلے علاقے

کیا نقل و حرکت کا جائز ثبوت دینا ضروری ہے؟کیا یہ ضروری ہے کہ خود علانی فارم کا ہونا ضروری ہے؟
صبح 5بجے سے رات 10بجے تک خود علانی کے فارم کا ہونا ضروری نہیں ہے، لیکن رات 10بجے سے صبح 5بجے تک کسی قسم کی نقل و حرکت بلا وجہ نہیں ہونی چاہئے اور صرف ان وجوہات کی بنا پر ہونی چاہئے جن کی اجازت ہے۔

کیا میں کسی رشتہ دار یا دوست جو اپاہج ہویا خود کار نا ہو کی تیمارداری اور مدد کے لیے جا سکتا ہوں؟
جی ہاں ، یہ وجہ بہت ضروری ہے اور اس کے لیے کسی قسم کے وقت کی رکاوٹ نہیں ہے۔ لیکن رات 10بجے سے صبح 5بجے تک خود علانی فارم کا ہونا ضروری ہے۔

میری علیہدگی یا طلاق ہو چکہ ہے، کیا میں نا بالغ بچوں کو ملنے کے لیے جا سکتاہوں؟
جی ہاں ، نا بالغ بچوں کو ملنے کے لیے دوسرے سرپرست کو جانے کی اجازت ہے چاہے وہ لے پالک ہو، وہ انہیں لینے کے لیے بھی جا سکتے ہیں ، اور ان کو ایک بلدیہ سے دوسری میں بھی جانے کی اجازت ہے۔

دت کی جگہوں میں جا سکتا ہے؟
جی ہاں ، لیکن صرف صبح 5بجے سے رات 10بجے تک۔

اگر میں ایک بلدیہ میں رہ رہا ہوں لیکن کام کسی دوسری بلدیہ میں کر رہاہوں تا کیا میں کام پر آ جا سکتا ہوں؟
جی ہاں

اگر کوئی اپنے رہنے کے علاقے ، یا مستقل رہائش سے باہر ہو تو کیا وہ واپس آ سکتا ہے؟
جی ہاں

اورنج علاقے

کیا نقل و حرکت کا جائز ثبوت دینا ضروری ہے؟کیا یہ ضروری ہے کہ خود علانی فارم کا ہونا ضروری ہے؟
صبح 5بجے سے رات 10بجے تک ایک ہی بلدیہ میں نقل و حرکت کے لیے وجہ کا ظاہر کرنا ضروری نہیں ہے۔ کسی اور بلدیہ میں جاتے ہوئے اور رات 10بجے سے صبح 5بجے تک اپنی بلدیہ میں بھی یہ ضروری ہے کہ نقل و حرکت کی وجہ ان اجازتوں کے مطابق ہونی چاہیے جو حکومت کی جانب سے جاری کردہ ہیں، اور خود علانی کا فارم بھی ہونا چاہیے جو قومی اور مقامی پولیس آپ سے طلب کر سکتی ہے۔ 

کیا میں کسی رشتہ دار یا دوست جو اپاہج ہویا خود کار نا ہو کی تیمارداری اور مدد کے لیے جا سکتا ہوں؟
جی ہاں ، یہ وجہ بہت ضروری ہے اور اس کے لیے کسی قسم کے وقت کی رکاوٹ نہیں ہے۔

میری علیہدگی یا طلاق ہو چکہ ہے، کیا میں نا بالغ بچوں کو ملنے کے لیے جا سکتاہوں؟
جی ہاں ، نا بالغ بچوں کو ملنے کے لیے دوسرے سرپرست کو جانے کی اجازت ہے چاہے وہ لے پالک ہو، وہ انہیں لینے کے لیے بھی جا سکتے ہیں ، اور ان کو ایک بلدیہ سے دوسری میں بھی جانے کی اجازت ہے۔

دت کی جگہوں میں جا سکتا ہے؟
جی ہاں ! لیکن صرف صبح 5بجے سے رات 10بجے تک۔ لیکن رات 10 سے صبح 5بجے تک وہی قانون لاگو ہوتا ہے جو لال علاقوں کے لیے ہے۔

اگر میں ایک بلدیہ میں رہ رہا ہوں لیکن کام کسی دوسری بلدیہ میں کر رہاہوں تا کیا میں کام پر آ جا سکتا ہوں؟
اس صورت میں نقل و حرکت کی وجہ کا ظاہر کرنا ضروری ہے کہ اس شخص کا کام پر جانا ضروری ہے اور وہ گھر سے کام نہیں کر سکتا۔

اگر کوئی اپنے رہنے کے علاقے ، یا مستقل رہائش سے باہر ہو تو کیا وہ واپس آ سکتا ہے؟
جی ہاں ! وہ دوبارہ اپنی رہائش کے علاقے میں داخل ہو سکتا ہےلیکن صرف اگر وہ پہلی بار داخل ہو رہا ہو تو۔ اس کے بعد اس شخص کو نقل و حرکت کے مندرجہ ذیل اصول و ضوابط پر پابند رہنا ہو گا: بہت ضروری کام /کاروبار، بہت ہی ضروری وجہ، پڑھائی کے حوالے سےیا پھر صحت کے حوالے سے، یا پھر اس قسم کے کام یا سروسز کے لیے جو اس بلدیہ میں فراہم نہ ہوں (مثال کے طور پرپوسٹ آفس ، خرید و فروخت وغیرہ، لیکن اگر یہ سہولیات اس کی بلدیہ میں موجود نہ ہوں تو)۔

سرخ علاقے

کیا نقل و حرکت کا جائز ثبوت دینا ضروری ہے؟کیا یہ ضروری ہے کہ خود علانی فارم کا ہونا ضروری ہے؟

ہر شخص کو اس کی نقل و حرکت کی وجہ کو ثابت کرنا ہے اور وہ اس زمرے میں آتی ہو جس کی اجازت حکومت کی جانب سے ہو، خود علانی کا فارم بھی پہلے سے موجود ہونا چاہیے اور وہ قومی پولیس یا مقامی پولیس کی پوچھ گیچھ کے دوران طلب کیا جا سکتا ہے۔

کیا میں کسی رشتہ دار یا دوست جو اپاہج ہویا خود کار نا ہو کی تیمارداری اور مدد کے لیے جا سکتا ہوں؟
جی ہاں ، کیونکہ یہ بہت ہی زیادہ ضرورت کے زمرے میں آتا ہے۔

میری علیہدگی یا طلاق ہو چکہ ہے، کیا میں نا بالغ بچوں کو ملنے کے لیے جا سکتاہوں؟
جی ہاں ، نا بالغ بچوں کو ملنے کے لیے دوسرے سرپرست کو جانے کی اجازت ہے چاہے وہ لے پالک ہو، وہ انہیں لینے کے لیے بھی جا سکتے ہیں ، اور ان کو ایک بلدیہ سے دوسری میں بھی جانے کی اجازت ہے۔

دت کی جگہوں میں جا سکتا ہے؟
جی ہاں ، عبادت کی جگہوں میں جانے کی اجازت ہے لیکن اس بات کا خیا ل رکھا جائے کہ وہ آپ کے گھر سے قریب ترین جگہ پر ہوں ۔ تاہم اس بات کا بھی خیال رکھا جائے کہ ان جگہوں پر جانے کی اجازت صرف اس صورت میں جب جماعت بندی سے گریز کیا جائے اور ہر شخص کے درمیان کم از کم ایک میٹرکا فاصلہ ضرور ہو۔ عبادت کی جگہوں پر جانے کی اجازت اس لیے بھی ہے کیونکہ وہ کام کے حوالے سے بھی ہو سکتا ہے اور ضرورت کی بنا پر بھی، مذہبی تہواروں پر بھی جانے کی اجازت ہے۔

اگر میں ایک بلدیہ میں رہ رہا ہوں لیکن کام کسی دوسری بلدیہ میں کر رہاہوں تا کیا میں کام پر آ جا سکتا ہوں؟
اس صورت میں نقل و حرکت کی وجہ کا ظاہر کرنا ضروری ہے کہ اس شخص کا کام پر جانا ضروری ہے اور وہ گھر سے کام نہیں کر سکتا۔

اگر کوئی اپنے رہنے کے علاقے ، یا مستقل رہائش سے باہر ہو تو کیا وہ واپس آ سکتا ہے؟
جی ہاں ! وہ دوبارہ اپنی رہائش کے علاقے میں داخل ہو سکتا ہےلیکن صرف اگر وہ پہلی بار داخل ہو رہا ہو تو۔ اس کے بعد اس شخص کو نقل و حرکت کے مندرجہ ذیل اصول و ضوابط پر پابند رہنا ہو گا: بہت ضروری کام /کاروبار، بہت ہی ضروری وجہ، پڑھائی کے حوالے سےیا پھر صحت کے حوالے سے، یا پھر اس قسم کے کام یا سروسز کے لیے جو اس بلدیہ میں فراہم نہ ہوں (مثال کے طور پرپوسٹ آفس ، خرید و فروخت وغیرہ، لیکن اگر یہ سہولیات اس کی بلدیہ میں موجود نہ ہوں تو)۔