Categories
aiuti sociali Evidenza Minori

خاندانی امدادی چیک

 خاندانی اور یونیورسل چیک خاندانوں کے لیے ایک ایسی معاشی مدد ہے جو ایک کنبہ کے ہر نابالغ فرد کے بالغ ہونے تک مہیا کی جاتی ہے ، کچھ خاص وجوہات کی بنا پر یہ نابالغ کے 21سال ہو جانے تک بھی بحال رہتی ہے۔

کہاجاتا ہے۔Isee اس  معاشی مددکا تعین  ائی این پی ایس کے ادارے کے تیار کردہ پروگرام کے مطابق ہر خاندان کی معاشی حثیت کے مطابق کیا جاتا ہے جسے 

اس معاشی مدد کے حصول کے لیے خاندان اس کی درخواست آئی این پی ایس ، یا پھر وہ ادارے جو اس کی درخواست کے لیے معاونت کر سکتے ہیں کے ذریعے یکم جنووری 2022سے درخواست بھیج سکتے ہیں۔ اس خاندانی معاشی مدد کا آغاز مارچ 2022سے کیا جائے گا۔ 

اس معاشی مدد کے لیے درخواست 30 جنوری 2022تک پیش کی جا سکتی ہے، اگر درخواست قبول ہو جائے تو اس کی ادائگی مارچ 2022سے ہی کی جائے گی۔ 

کون اس کے لیے درخواست پیش کر سکتاہے

اس معاشی مدد کو حاصل کرنے کے لیے مندرجہ ذیل چیزوں کا ہونا لازمی ہے:

-اطالوی شہریت، یاپھر یورپین یونین کے کسی اور ملک کی شہریت (یا اس کے گھر والوں میں سے اگر کسی ایک پاس ہو)، یا پھر اگر وہ یورپین یونین کے علاوہ کسی اور ملک سے ہے لیکن اس کے پاس یو ای کا رہائشی پرمٹ ہو کہ وہ ایک لمبے عرصے سے یہا ں رہائش پذیر ہے، یا پھر اس کے پاس ایک ایسا رہائشی پرمٹ ہو جس پر اس کو کام کرنے کی اجازات ہو اور اس نے چھ ماہ سے زائد کام کیا ہو، یا پھر اگر وہ تحقیقی رہائشی پرمٹ رکھتا ہواور اس کو اٹلی میں چھ ماہ سے زائد کا عرصہ ہو گیا ہو۔ 

-اگر وہ باقاعدگی سے اپنی تمام آمندن پر حکومت کو ٹیکس دیتا ہو؛

-کم از کم اس کو اٹلی میں رہتے ہوئے دو سال ہو گئے ہوں ، چاہے مسلسل طور پر نا رہا ہو، یا پھر اس کے پاس بنا معیاد کے کام کا کانٹریکٹ ہو، اور یا پھر معیاد کے ساتھ کام کا کانٹریکٹ ہو لیکن اگر اس کو چھ ماہ کا عرصہ ہو گیا ہو۔

خاندانی معاشی مدد کی خصوصیات

-یہ معاشی مدد یونیورسل ہے-ہر قسم کی آمدن والے افراد اس سے فائدہ حاصل کر سکتے ہیں-یہ ہمیشہ جاری رہنے والا ہے-جیسے جیسے خاندانی آمدن کے سالانہ تعین کی رپورٹ (ایی ایس ای ای)کم ہوتی ہے یہ اتنا ہی بڑھ جاتا ہے۔ 

-اس خاندانی معاشی مدد کی درخواست ہر بچہ کی پیدائش کے 120دن کے اندار پیش کی جا سکتی ہے، یا پھر حمل کے ساتویں مہینے سے اور پھر ہر اس بچے کے لیے جس کے ذمہ دار آپ ہیں جب تک کہ وہ 21سال کا نہ ہو جائے۔ 

-آپ کے وہ بچے جو 18سال سے زیادہ اور 21سال سے کم کے ہیں، اس معاشی مدد کو حاصل کرنے کے لیےلازمی ہے کہ وہ مندرجہ ذیل شرائط میں سے کسی ایک کے زمرے میں آتے ہوں:

-وہ کوئی تعلیمی یا فنّی فارمیشن یا پھر کوئی ڈگری حاصل کر رہے ہوں۔

-اگر فنّی ٹریننگ کر رہے ہوں یا اگر کام کررہے ہوں تو پھر ان کی سالانہ آمندن 8000یورو سے کم کی ہو۔

-اگر اس کا اندراج بے روزگاری کے پبلک سروسز کے دفتر میں ہوا ہواور وہ کام کی تلاش میں ہو۔

-اگر وہ یونیورسل سِول سروسز کر رہا ہو۔

-ایک دفعہ جب درخواست بھیج دی جاتی ہے تو اگر یہ قبول ہوجائے تو اس کا اجرا مارچ کے مہینے سے ہو گا، یا پھر جب درخواست قبول ہونے کے 60 دن بعد۔

-اس معاشی مدد کاحصول بینک میں ابین نمبر کے ذریعے یا پھر گھر پر چیک حاصل کرنے کی صورت میں کیا جا سکتا ہےسوائے ان  لوگوں کے جو حکومتی شہریت کی معاشی مدد حاصل کرتے ہیں ۔

-اس معاشی مدد کا خاندان کی سالانہ آمندن پر فرق نہیں پڑتا۔ 

اس بات کا خیال کریں: جب آپ اس کی درخواست بھیجتے ہیں تو اس دوران خاندانی سالانہ آمندن کا سرٹیفیکیٹ ساتھ بھیجیں تا کہ اس کے مطابق آپ کو معاشی مدد مل سکے۔ اگر آپ اس سرٹیفیکیٹ کے بغیر درخواست بھیجتے ہیں تو پھر ای این پی ایس کا ادارہ معاشی مدد کا تعین آپ کی سالانہ آمندن کے بغیر کرے گا اور وہ کم سے کم تر ہو گی۔ 

وہ کون سی دوسری سوشل امداد ہیں جن کے ساتھ خاندانی معاشی مدد حاصل کی جا سکتی ہے۔

مارچ 2022سے خاندانی معاشی مدد کچھ اور معاشی امدد کی جگہ لے گی جو پہلے ان خاندانوں کو دی جاتی تھی جن کے بچے تھے۔

 

-خاندانی معاشی مدد ،حمل کا بونس(کل کی ماں کا بونس) ، پیدائش کا بونس(بچے کا بونس)، اے این ایف (خاندانی بونس)اور 21سال سے کم عمر بچوں کے حوالے سے ٹیکس کی کٹوتیوں، کی جگہ لے گا۔ 

-خاندانی معاشی مدد کا حصول حکومتی شہریت کی معاشی مدد اور چھوٹے بچوں کے اسکول کے بونس کے ساتھ کیا جا سکتا ہے۔ 

خیال رہے: اگر آپ حکومتی شہریت کی معاشی مدد حاصل کرتے ہیں تو پھر خاندانی معاشی مدد خود بخود وصول ہو جائے گی۔ 

خاندانی معاشی مدد کی حصولی کا تعین کیسے کیا جا سکتا ہے

ائی این پی ایس کے مندرجہ ذیل لنک پر کلک کر کے آپ اس کی حصولی کا تعین کر سکتے ہیں:

https://servizi2.inps.it/servizi/AssegnoUnicoFigli/Simulatore

 

وہ لوگ جو خاندانی معاشی مدد کے حق دار نہیں ہیں

فل حال چند رہائش پذیر جن کے پاس کچھ اس قسم کے رہائشی پرمٹ ہیں جو خاندانی معاشی مدد حاصل نہیں کر سکتے۔ اس وجہ سے اگر اس میں کسی قسم کی تبدیلی کی جائے گی تو اس کی معلومات آپ کو اس پیج پر ملے گی۔ 

درخواست کیسے بھیجی جا سکتی ہے

درخواست بھیجنے کے لیے آپ کو ائی این پی ایس کے پیج پر جانا ہو گا:

https://serviziweb2.inps.it/PassiWeb/jsp/spid/loginSPID.jsp?uri=https%3a%2f%2fservizi2.inps.it%2fservizi%2fAssegnoUnicoFigli&S=S

یا پھر آپ 803164پر (فکس فون سے) یا پھر 06164164پر (موبائل فون سے)یا پھر ائی این پی ایس کے رجسٹرڈ دفاتر سے

https://www.inps.it/servizi-online/servizi-per-i-patronati/informazioni/gli-enti-di-patronato

اگر آپ کو اطالوی زبان نہیں آتی اور ترجمان کی ضرورت ہے تو پھر ریفیوجی اور بین الاقوامی پناہ کے متلاشوں کے لیے ٹول فری نمبر (اے آر سی آئی)پر رابطہ کریں: 800905570 یا پھر لائکا موبائل:3511376335



assegno unico
Pidgin English
Bambara
Pular
Soninke
Categories
Covid Evidenza Salute

10جنوری کے حکم نامے کے بعدویکسین کے مکمل ہونے اور گرین پاس کے حوالے سے : نئے قوانین

obbligo vaccino over 50

10جنوری 2022کو ویکسین اور گرین پاس کے حوالے سے نئے قوانین کا حکم نامہ جاری کیا گیا تھا۔ کس کو لازمی ویکسین لگوانی ہو گی؟کب سپر گرین پاس کی ضرورت پڑ سکتی ہے اور کن جگہوں پر صرف گرین پاس استعمال کیا جا سکتا ہے؟آئیے یہاں آپ کو ہم ان تمام خاص قوانین کے بارے میں تفصیل سے بتاتے ہیں جن کی پابندی 31مارچ 2022تک یا پھر جب تک خطرناک صورت حال جاری رہے گی تک عائد رہے گی۔ 

سب سے پہلے، 10جنوری 2022سے کوویڈ 19کی ویکسین کی تیسری ڈوز کی معیاد میں کمی کر دی گئی ہے: اب یہ دوسری ڈوز لگوانے کے چارماہ بعد لگوائی جا سکتی ہے، جبکہ پہلے اس کے لیے 5ماہ تک انتظار کرنا پڑتا تھا۔ یکم فروری 2022سے گرین پاس کی معیاد 9ماہ سے 6ماہ کر دی گئی ہے۔ 

مختلف عمر کے لوگوں کے لیے مختلف قوانین لاگو ہوں گے: دیکھتے ہیں کو ن سے والے۔

50سال سے زائد والوں کے لیے

نیا حکم نامہ مندرجہ ذیل لوگوں کے لیے ویکسین لازمی قرار دیتا ہے:

تمام وہ اطالوی شہری اور غیر ملکی رہائشی جن کی عمر کم از کم 50سال ہے (یا وہ جو 15جنوری تک پچاس سال کے ہو جائیں گے، جو اٹلی میں رہائش پذیر ہیں اور وہ قومی طبی سہولیات کے لیے رجسٹرڈ ہیں)۔ 

ان  لوگوں کو ویکسین لگوانے کی ضرورت نہیں ہے جن کے پاس ان کے ڈاکٹرکی جانب سے طبی سرٹیفیکیٹ موجود ہو گا۔ اے ایس ایل اگر وہ خاندانی ڈاکٹر کے ساتھ متفق ہو گا تو وہ سارس کوویڈ19 کی ویکسین نا لگوانے کا سرٹریفیکٹ حکومتی محکمہ صحت کی اجازات سے جاری کرے گا۔ 

تمام وہ ملازمین جن کی عمر 50سا ل سے زائد ہو گی 15فروری 2022سے سپر گرین پاس کے بغیر کام پر نہیں جا سکیں گے۔ اگر وہ اس کے بغیر کام پر جائیں گے تو ان کی غیر حاضری جانی جائے گی، اور اس دن کا معاوضہ بھی نہیں ملے گا۔ لیکن اس کی کوئی اور سزا نہیں ملے گی اور جب تک وہ کام پر واپس نہیں آئیں گے ان کی جگہ کسی اور کو نہیں رکھا جائے گا۔ 

15فروری 2022سے 15جون 2022تک سپر گرین پاس کا کام کی جگہ پر جانے کے لیے لازمی قرار دیا جائے گا۔ یہ تما م ذاتی کام کرنے والوں یا پھر جو دوسروں کے پاس جا کر کام کرتے ہیں کے لیے بھی لازمی ہو گا۔ جب بھی کو ئی کسی کے گھر کام کے لیے جائے گا یا پھر جیسے دوسرے دفترروں میں لاگو ہوتا ہے ایسے ہی جب وہ کسی کے دفتر میں بھی جائیں گے لازمی ہو گا۔ 

بنیادی گرین پاس

20جنوری 2022سے مندرجہ ذیل کے لیے لازمی ہوگا:

– حجام ، بیوٹی پارلر اور تمام ایسے ادارے

یکم فروری 2022سے مندرجہ ذیل جگہوں کے لیے لیے بنیادی گرین پاس کی ضرورت ہو گی:

-بینکوں میں داخلے کے لیے

-ڈاک خانے میں داخلے کے لیے

-دکانوں میں داخلے کے لیے سوائے کھانے پینے کی اشیا کی دکانوں اور فارمیسی کے۔

سپر گرین پاس

10جنوری سے مندرجہ ذیل کے لیے لازمی ہو جائے گا:

-کسی بھی قسم کی پبلک ٹرانسپورٹ میں سواری کے لیے

-پبلک والی کسی بھی جگہ پر جیسے کہ بار، کافی شاپ، ریسٹورینٹ ، میوزیم اور ہوٹل وغیرہ

-سویمنگ پول اور جم جانے کے لیے

ویکسین کے بغیر والے

جس کو ویکسین نہیں لگی ہوئی اس کو پہلی ڈوز 31جنوری 2022سے پہلے لگوانی ہوگی تک کہ 15فروری 2022سے اس کے پاس سپر گرین پاس موجود ہو سکے۔ 

اگر کسی نے پھر بھی ویکسین نہ لگوائی تو یکم فروری2022 سے اس کے لیے مندرجہ ذیل کا استعمال اور داخلہ ممنوع ہو گا:

– کسی بھی قسم کی پبلک ٹرانسپورٹ کا استعمال

-بار اور ریسٹورینٹ میں داخلہ

-ہوٹلوں اور میوزیم میں داخلہ

-سویمنگ پول اور جم میں داخلہ

وہ لوگ جن کو  ویکسین نہیں لگی ہو گی  صرف ان دکانوں میں داخل ہو سکیں گے جو بنیادی ضروریات یا ضروری مصنوعات فروخت کرتے ہیں، جیسے کہ فارمیسی، سپر مارکیٹ، تمباکو نوشی اور ہارڈویئر اسٹوروغیرہ۔

قوانین کا احترام نہ کرنے والوں کے لیے جرمانہ

ویکسین کی ذمہ داری آئندہ 15 جون تک عائد  رہے گی۔ یکم فروری 2022 سے، ان لوگوں کو100 یورو کا جرمانہ ہو گا جنہوں نے ویکسین نہیں لگوائی ہو گی۔ اس کی چیکنگ ریونیو ایجنسی کی طرف سے کی جائے گی، جو ہیلتھ کارڈ اور رجسٹری آفس سے ڈیٹا کا حوالہ دے گی۔ ایسے کارکنوں کے لیے بھی جرمانے ہیں جو ویکسین کی ذمہ داری کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کام کی جگہوں پر داخل ہوں گے۔ دفعات کی خلاف ورزی پر 600 اور 1500 یورو کے درمیان کا جرمانہ ہو گا۔ کاروباری مالکان جو چیکنگ کی تعمیل کرنے میں ناکام رہیں گے، پر  400 سے 1000 یورو تک کا جرمانہ عائد  ہوگا۔

 1,476 Visite totali,  1 visite odierne